بحری بیمہ

مرین کارگو انشورنس، امپورٹرز، ایکسپورٹرز، ٹریڈرز، بنکوں کی امپورٹ ایکسپورٹ پر لاگت، کے لیے ہے یا وہ دوسرے افراد جو کارگو کے پاکستان میں پہنچنے تک کے خطرات کی تلافی میں دلچسپی رکھتے ہوں یا بیرون ملک اپنی منزل پر پہنچنے تک.

سکیورٹی جنرل انشورنس کمپنی لمیٹڈ انشورنس کی خدمات تقریباً مالی اخراجات تک کے لیے ہیں۔اس کا کور تمام قسم کی اشیاء کے لیے ہے۔ جو سمندر کے ذریعے لائی جائیں، ریل کے ذریعے یا موزوں زمینی سواریوں کے ذریعے سے، اور اسے ان تمام خطرات کے لیے تیار کیا گیا ہے جو کسٹمرز کو درپیش ہوں۔انسٹی ٹیوٹ آف لندن نے تین بنیادی کارگو سیٹ کے ضمنات تیار کیے ہیں جن کے نام آئی سی سی (A) ، آئی سی سی (b) اور آئی سی سی (C) جو کہ عام اوسط کے ساتھ سمندری اخراجات پرسفری نقصان کی تلافی کرتی ہیں لیکن دوسرے خطرات میں اس کا کردار کم ہے ۔جنگ اور ایس آر سی سی پہلے ہی ضمنات میں تحفظ شدہ ہیں جیسا کہ کارگو شپمنٹ کے تحفظ کے لیے انسٹی ٹیوٹ کارگو کے ضمن (A) میں یقین دہائی کرائی گئی ہے۔

انسٹی ٹیوٹ کارگو کے ضمن (A)
یہ تمام نقصانات کا اعادہ کرتی ہے ان تمام اشیاء کا جو کہ بیمہ شدہ ہوں ماسوائے ان کے جو ضمنات کے دائرے میں نہ آتی ہوں۔ اگرچہ خطرات کی نشاندہی نہیں کی گئی ہے بہرحال، اشیاء کے جگہ سے روانگی کے وقت سے یہ مؤثر ہوتی ہیں۔

آئی سی سی (A) کو اشیاء کی انشورنس کے لیے موزوں سمجھا گیا ہے جیسے نقصان کو برداشت کرنا، ٹوٹنے کا خطرہ، خراشیں پڑ جانا، ٹیڑھا ہونا، چوری ہونا، کم قیمت اشیاء کو کھو جانا، پانی کے خطرات بشمول بارش کا پانی، لیک کر جانا، اور کسی شے کا اس میں ضم ہوجانا وغیرہ۔

اس بات کو اہمیت دی جاتی ہے کہ بہت زیاد مقدار میں قدرتی اشیاء کی انشورنس کروائی جائے جس میں چاول، دالیں، فروٹ، سبزیاں، کافی، چائے، بیج دوائیاں، محلول، کیمیکل ٹوکریوں میں یا ڈرموں میں اور پیپا، کاغذ،کمزور اشیاء، اعلیٰ کوالٹی کا شیشہ، کراکری وغیرہ، انڈسٹریل پلانٹ، ٹیکسٹائل مشینری، سپیئرپارٹس، آلات، برقی اشیاء، ائیر کنڈیشنرز، کمپیوٹرز، ٹیلی ویثرن سیٹ، ریفریجریٹرز نئی موٹر گاڑیاں وغیرہ شامل ہیں۔

کارگو ضمنات کالاگو ہونا۔
اس کی وسعت انتہائی وسیع ہے جیسا کہ میرین (A) کے ضمنات میں درج ہے۔ ’’جنرل اوسط‘‘ اور ’’دونوں سفر کے دوران حادثہ‘‘ کی ضمنات فضائی سفر سے متعلق نہ ہیں۔ وقت کی معیاد جہاز سے اتارنے کے تیس دن بعد تک کی ہے جس کو بحری جہاز کے کارگو سے ڈسچارج ہونے کے 60 دن تک میرین کے ضمن (A) سے کمپیئر کیا جا سکتا ہے ۔جہاز کے فٹ نہ ہونے کے بارے میں جنرل ایکسکلوژن ضمنات میں اس معاملے میں درج ہے۔
نوٹ:
(1 یہ ضروری ہے کہ نقصان قصداً نہ ہوا ہو بلکہ یہ اتفاقاً ہوا ہو۔
(2 جو نقصان یقینی ہونا ہو اس کا کوئی تحفظ نہ ہے۔
خطرات کا تحفظ ضمن (B) اور (C) میں ہے۔

نقصانات کا درج ذیل سے تعلق ہو گا:
(1) آگ یا دھماکہ
(2) بحری جہاز یا جہاز معیاری ہو، زمین پر یا پانی میں اترا ہو۔
(3) واپس آتے ہوئے یا زمینی سواری چھوڑتے ہوئے۔
(4 ایماء پر یا جہاز کے ساتھ ہونا، جہاز یا سواری پانی کی بجائے کسی اور چیز سے۔
(5 مشکل پورٹ پر کارگو کا ڈسچارج ہونا۔

نقصان کی وجہ:
(6 بھول جانے کی وجہ سے
(7 جہاز سے پانی پھینک دینے سے۔
اضافی نقصانات کا کور ضمنات (B) میں ہو گا۔
نقصانات کا تعلق درج ذیل سے ہو گا۔
(i زلزلہ، لاوا یا آگ کی وجہ سے۔

نقصانات کی وجہ:
(i شپ سے پانی میں ڈالنا۔
(ii سمندر، جھیل یا دریا کا پانی بحری جہاز میں داخل ہونا اور اس کا موجود رہنا، سواری، کنٹینر، لفٹ وین یا سٹور کی جگہ پر۔
(iii پیکٹ کا مکمل نقصان، پانی میں ڈوب جانا، یا لوڈ کرتے و قت یا اتارتے وقت جہاز سے گرا دینا۔
کارگو کے ضمن (B) کا اطلاق ہو گا۔
جیسا کہ اوپر دکھایا گیا ہے کہ آئی سی سی (B) آئی سی سی (C) کے تمام نقصانات کو کور کرتا ہے اور یقینی خطرات جو کہ آگ، زلزلہ، لاوا، پانی میں ڈوب جانا، اور جو نقصان سمندری پانی ، جھیل، یا دریا کے پانی سے ہوان نقصانات کو بھی کور کرتا ہے۔
کسی پیکٹ کا مکمل نقصان تب کور ہو گا جب یہ شپ سے لوڈنگ یا آف لوڈنگ کرتے وقت پانی میں ڈوب جائے۔کور کم خطرات والی اشیاء پر ہو گا جیسے بھاری مشینری، سٹیل کی اشیاء، پیکنگ میں موجود اشیاء، آلات، پرانی گاڑیاں وغیرہ۔
کارگو کے ضمن (C) کا اطلاق:
یہ آگ کے انتہائی خطرناک حالات کو کور کرتا ہے۔ کنارہ چھوڑتے ہوئے، نیچے تہہ میں جاتے ہوئے، اور نقصان بھی شامل ہوتے ہیں جو زمینی سواریوں کے حادثوں کی شکل میں ہوں۔ سمندر کا پانی اشیاء کو خراب کرے تو یہ ٹھیک ہو سکتی ہیں جب یہ سمندری جہاز یا جہاز سے منسوب ہوتی ہیں جب یہ ڈوب رہا ہو یا پانی میں الٹ جائے۔ ان کی انشورنس کرنا مناسب ہے جو کہ زیادہ فائدہ مند ہیں لیکن کم قیمت جیسے لکٹری، لوہا، فوجیوں کے عارضی گھر، سٹیل راڈ،سریے، گارڈر وغیرہ۔

اندرونی سفر کی انشورنس:

کور اشیاء کے سفر پر دیا جاتا ہے جو کہ اشیاء کے پاکستان میں ایک جگہ سے دوسری جگہ پر ان کی منزل تک ہوتا ہے۔ کور ریل/ روڈ کارگو ضمنات (A) اور (B) کے تحت دیا جاتا ہے جو کہ اندرون ملک کے سفر پر ہوں۔
جنرل اخراج جو کہ آئی سی سی (B) اور (C) میں مشترک ہیں۔
(1 کو ر کی جانے والی چیز کا نقصان یا اخراجات کا تعلق قصداً غلط انتظام سے متعلق ہو گا۔
(2 بیمہ شدہ چیز میں عام لیکیج، معمولی نقصان وزن یا حجم میں یا پیکنگ یا اس میں سوراخ ہونا۔
(3 نقصان یا اخراجات جو غیر موزوں طریقے سے پیکنگ کرنے میں ہوں اس چیز کے جو بیمہ شدہ ہو۔پیکنگ کنٹینر یا لفٹ وین میں تصور کی جائے گی۔ لیکن جب اسے اٹھایا جائے انشورنس کروانے والے یا اس کے ملازمین سے۔
(4 نقصان یا خرچہ جو بیمہ شدہ چیز کے کمزور ہونے کی وجہ سے ہو۔
(5 نقصان یا خرچہ جو بوجہ تاخیر ہو۔
(6 نقصان یا خرچہ جو اس وجہ سے نمودار ہو کہ جہاز کے مالک، مینجرز اور آپریٹرز وغیرہ مالی طور پر ڈیفالٹ کرجائیں اور دیوالیہ ہو جائیں۔
(7 بیمہ شدہ چیز کو جان بوجھ کر خراب کرنا یا جان بوجھ کر تباہ کرنا یا اس کا کوئی حصہ کسی غلط کام کی وجہ سے کسی بھی شخص سے خراب ہو جائے۔
(8 نقصان یا اخراجات کا تقاضا اس وجہ سے ابھرے کہ کسی جنگی ہتھیار کا استعمال ہو یا ایٹمی نیوکلئیر کا کوئی حصہ یا اس طرح کا کوئی اور کام جس کے نتیجے میں تابکاری یا اس طرح کا کوئی اور معاملہ ہو۔

آئی سی سی(A) کا جنرل اخراج:
اوپر دیے گئے اخراج (7) کے علاوہ تمام دوسرے اخراج آئی سی سی (A) پر نافذ ہوں گے۔
دوسرے اخراج:
1 سواری کا ان فٹ ہونا۔ 2 ۔جنگی اخراج، 3 ۔ایس آر سی اخراج۔
برائے مہربانی درج ذیل ضمنا ت کو ڈاؤن لوڈ کریں تا کہ مخصوص تحفظ نمایاں ہو جائے۔ اخراج، تحفظ کا دورانیہ، سامان کے معاہدے کی منسوخی، تحفظی دلچسپی، دیے جانے والے اخراجات، بنانے کا مکمل نقصان، سفر کے دوران بڑھنے والی قیمت، انشورنس کرانے والے کی ذمہ داری۔
(1 کارگو کا ضمن (A) لگائیے۔
(2 کارگو کا ضمن (B لگائیے۔
(3 کارگو کا ضمن (C) لگائیے۔
(4 جنگ کی ضمنات (کارگو) لگائیں۔
(5 سٹرائیک ضمنات (کارگو) لگائیں۔
(6 کارگو ضمنات (ائیر) لگائیں۔(اس میں ڈاک کے ذریعے بھیجی گئی چیزیں شامل نہیں)
(7 جنگ کی ضمنات (ایئر کارگو) لگائیں (اس میں ڈاک کے ذریعے بھیجی گئی چیزیں شامل نہیں)
(8 سٹرائیک ضمنات (ایئر کارگو) لگائیں۔
جنگی ضمنات لگائیں (بذریعہ ڈاک)